Monday , August 21 2017
Home / Agri News / حکومت پنجاب: 30 ایکڑ رقبہ پر زرعی ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کا قیام

حکومت پنجاب: 30 ایکڑ رقبہ پر زرعی ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کا قیام




  • لاہور: (3مارچ 2013)حکومت پنجاب کی طرف سے 190 ملین روپے کی لاگت سے تحصیل کروڑ لعل عیسن میں تھل کے 6 اضلاع لیہ، ڈی جی خان، راجن پور، مظفر گڑھ، بھکر اور میانوالی کے میٹرک پاس طلبا کو روزگار کے نئے مواقع فراہم کرنے کیلئے 30 ایکڑ رقبہ پر زرعی ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔ان خیالات کا اظہار ملک احمد علی اولکھ وزیر زراعت و لائیو سٹاک پنجاب نے ٹریننگ انسٹیٹیوٹ تحصیل کروڑ لعل عیسن ضلع لیہ میں زرعی ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کی نئی عمارت کا افتتاح کرتے ہوئے کیا۔

    اس موقع پر ڈاکٹر انجم علی بٹر ڈائریکٹر جنرل زراعت توسیع و اڈاپٹیو ریسرچ،ڈاکٹر قربان علی سندھو ڈائریکٹر ایمری ملتان، صادق رضا چیمہ ای ڈی او زراعت لیہ، ریاض احمد جاوید ڈائریکٹر زرعی ٹریننگ انسٹیٹیوٹ، زراعت و لائیو سٹاک کے آفیسران اور طلباء سمیت کاشتکاروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ریاض احمد جاوید ڈائریکٹر زرعی ٹریننگ انسٹیٹیوٹ نے بریفنگ کے دوران بتایا کہ نئے تعمیر شدہ ٹریننگ انسٹیٹیوٹ میں 3 سالہ فیلڈ اسسٹنٹ کورس کی سہولیات میسر ہوں گی اور انہوں نے بتایا کہ اس ادارہ میں 15 ایکڑ رقبہ کیمپس بلڈنگ جبکہ 15 ایکڑ رقبہ ریسرچ کے لئے مختص کیا گیا ہے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ اس انسٹیٹیوٹ میں کلاسز کا باقاعدہ آغاز کیا جا چکا ہے اور اس وقت ادارہ ھذا میں 100 طلباء زیر تعلیم ہیں جبکہ ہر سال 50 طلباء کا میرٹ پر داخلہ ہو گا۔صوبائی وزیر نے کہا کہ حکومت پنجاب نے زراعت کی ترقی کیلئے اربوں روپے کے فنڈزفراہم کیے ہیں اور جدید زرعی ٹیکنالوجی کے فروغ کیلئے 6 ارب روپے کی سبسڈی پر 30 ہزار ٹریکٹر کاشتکاروں کو شفاف قرعہ اندازی کے ذریعے فراہم کیے ہیں جبکہ اصلاح آبپاشی کے منصوبوں کے لئے 36 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔ 

    فروٹ اینڈ ویجیٹیبل ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کے تحت 57 کروڑ روپے سے 33 ہزار 575 کاشتکاروں کی بذریعہ فارمر فیلڈ سکول ٹریننگ جبکہ 14 کروڑ 85 لاکھ روپے کی لاگت سے کاشتکاروں کو اعلیٰ نسل کے پھلدار پودوں کی فراہمی بھی کی گئی ہے۔ 2010-12 میں سیلاب سے متاثرہ 2 لاکھ 33 ہزار کاشتکاروں میں 2 ارب 65 کروڑ روپے سے گندم کے تصدیق شدہ بیج کے 12 لاکھ 54 ہزار اور یوریا کھاد کے 10 لاکھ 60 ہزار بیگز مفت تقسیم کیے گئے۔ صوبائی وزیر نے مزید کہا کہ حکومت پنجاب بین الاقوامی منڈیوں تک رسائی اور برآمدات کے اہداف کے حصول کیلئے 2 ارب روپے کی لاگت سے زراعت و لائیو سٹاک مصنوعات کی سپلائی چین مینجمنٹ میں بہتری اور گلوبل گیپ و انٹرنیشنل فیچرڈ سٹنڈرڈ سرٹیفکیشن کو فروغ دے رہی ہے۔
    زراعت و لائیو سٹاک مصنوعات کی برآمدات کو فروغ دے کر پاکستان کو دنیا کی ایک بڑی معاشی قوت بنانے کے لئے پنجاب حکومت اپنے وسائل کا ایک بڑا حصہ اس پر خرچ کر رہی ہے تاکہ مکمل طور پر شفاف (Fully Trace Able) پراڈکٹس کی ترقی یافتہ ممالک کی منڈیوں تک رسائی ممکن ہو اور ہمارا کاشتکار اپنی محنت کا صحیح معاوضہ حاصل کر سکے۔

    ڈاکٹر انجم علی بٹر ڈائریکٹر جنرل زراعت توسیع و اڈاپٹیو ریسرچ نے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ وزیر اعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف کے پروگرام برائے فروغ کچن گارڈننگ کیلئے 24.18 ملین روپے مختص کیے گئے ہیں تاکہ عوام کو سستی، معیاری اور زرعی زہروں کے مضر اثرات سے پاک سبزیاں حاصل ہو سکیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ صوبہ پنجاب میں ٹنل ٹیکنالوجی کے فروغ کیلئے 31 کروڑ 57 لاکھ روپے کی سبسڈی سے 2 ہزار 654 ٹنلز کی تنصیب کی گئی ہے۔ بعد ازاں صوبائی وزیر ملک ااحمد علی اولکھ نے محکمہ زراعت اور مختلف فرٹیلائزر و پیسٹی سائیڈز کمپنیوں کی طرف سے لگائے گئے سٹالز کا معائنہ بھی کیا۔*****

    نظامت زرعی اطلاعات پنجاب21۔ سر آغا خان سوئم روڈ لاہورE.mail:ziratnama@hotmail.com، Ph.042-99200731, 99200729, Fax No. 042/99202911

    Agriculture in Pakistan

    About admin

    Check Also

    OVERCOMING A MENTAL ROADBLOCK FOR USING PLANT BREEDING SOFTWARE

    Report Issue: * Suggest Edit Copyright Infringment Claim Article Invalid Contents Broken Links Your Name: …

    Leave a Reply

    Be the First to Comment!

    Notify of
    avatar
    wpDiscuz